محترمہ نسرین سید

وقارِ سخن میں خوش آمدید
—————————————–
ایک شام ایک شاعرہ
……………………………………………………
شاعرہ کا نمائندہ شعر

عشقِ سوزاں کی ہوئی خاص عنائت مجھ پر
ہے جہاں راکھ ، مرا حُجرہ وہاں تھا پہلے

محترمہ نسرین سید
……………………………………………………
ایک شام ایک شاعرہ
……………………………………………………
تیرے ان نین کٹوروں کو ہنر کیسا ملا ؟
ان میں جو ڈوبا، اسے پار لگا دیتے ہیں
……………………………………………………
خموشیوں میں قیامت کا شور سنتی ہوں
سماعتوں کا ہنر ہو گیا عطا جب سے
……………………………………………………
دو گنا ہو گیا ہے طولِ غمِ ہجر مرا
تُو نے کیوں دی تھی دعا،’تجھ کو مری عمر لگے‘
……………………………………………………
جو آنکھوں سے کہی ہے بات تم نے
تھی کتنی تلخ، ہم ہی جانتے ہیں !!
……………………………………………………
وہاں پہنچا مرا حرفِ دعا کیا ؟
یہ کیسی کھلبلی ہے آسماں میں؟
……………………………………………………
ابھی محصور ہوں اُس لمحہِ سرشاری میں
میں نے کیا تم سے کہا، تم سے سنا، یاد نہیں
……………………………………………………
جانے کس خاک سے خمیر اٹھا
سر کی یہ خود سری نہیں جاتی
……………………………………………………
ایسا لگتا ہے چڑھا اِس پہ ترے عشق کا رنگ
دل کو جس رنگ میں دیکھا ہے، کہاں تھا پہلے
……………………………………………………
رشتوں کی ڈور کتنی ہی نازک سہی مگر
یہ تارِ عنکبوت ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ نہیں سہل توڑنا
……………………………………………………
کرے گا مجھ سے محبت وہ بے پناہ ، مگر
کڑی ہے شرط، کسی حکم کی نفی نہ کروں
……………………………………………………
کیا کہا آپ سے کچھ چُوک ہوئی گننے میں
آئیے بیٹھیے، پھر زخم شماری کیجے
……………………………………………………
کیا خبر تجھ کو، ہے کس دل سے اتارا ہم نے
ورنہ اِس دل میں تجھے کب سے مکیں رکھا تھا
……………………………………………………
تمہاری راہ میں بوئے ہیں بیج اشکوں کے
یہ راستہ ۔۔۔۔۔۔۔ گل و گلزار ہونے والا ہے
……………………………………………………
اس میں درکار ریاضت ہے ابھی عشق نہ کر
گیلی لکڑی سا سلگنا کہاں آتا ہے تجھے ؟
……………………………………………………
کیا ہے ہجر کا صحرا عبور تب جا کر
یہ جانا، اشک سمندر میں کیسے ڈھلتا ہے
……………………………………………………
محبت میں بھی از خود رفتگی کے پل نہیں آئے
ہمیں دورِ بلا نے کس قدر محتاط کر ڈالا
……………………………………………………
دعا ضرور لگی ہے کسی قلندر کی
ہے رہنا رقص میں مجھ کو غبار ہونے تک
……………………………………………………
درمیاں اور کچھ نہیں حائل
تیرے جلوے سے میری حیرت تک
……………………………………………………
ننھے ہاتھوں نے مرا پلّو پکڑ رکھا ہے
تُو سمجھتا ہے یہ زنجیر ترے پیار کی ہے
……………………………………………………
تری یادیں رکھیں رختِ سفر میں
نہ جانے کتنی صدیوں کا سفر ہو

محترمہ نسرین سید
……………………………………………………

وقارِ سخن میں خوش آمدید

FACEBOOK PAGE: www.facebook.com/waqaresukhan
WEBSITE LINK: www.mianwaqar.com/waqaresukhan